عمران خان، شاہد خاقان اور عائشہ گلالئی کے کاغذات نامزدگی مسترد

0
20

اسلام آباد: قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 53 سے پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان ، سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی اور پی ٹی آئی (گ) کی سربراہ عائشہ گلالئی کے کاغذات نامزدگی مسترد ہوگئے ہیں۔

عمران خان کے این اے 53 سے کاغذات نامزدگی پر اعتراضات کی سماعت ہوئی۔ جسٹس اینڈ ڈیمو کریٹک پارٹی کے امیدوار عبدالوہاب نے عمران خان کے خلاف اعتراضات ریٹرننگ افسر کو جمع کرائے تھے، جس پر دونوں فریقین کے وکلاءکی جانب سے دلائل مکمل کیے گئے۔

سماعت کے دوران عمران خان کے وکیل بابراعوان نے آرٹیکل 62 قانون شہادت آرڈیننس پڑھ کرسنایا اورکہا کہ عمران خان کے خلاف اعتراضات غیرتصدیق شدہ ہیں جوجعل سازی اورفراڈ پرمبنی ہیں۔ بابر اعوان نے موقف اختیار کیا کہ ان کے موکل پر تین نام نہاد الزامات لگائے گئے ہیں جن کی کوئی قانونی حیثیت نہیں، اعتراضات میں جس بیٹی کا حوالہ دیا گیا اس کی عمر27 سال ہے، نا تو ماں نے پاکستان میں کوئی دعوی کیا اور نا ہی بیٹی نے، عمران خان کے خلاف امریکا کی نام نہاد عدالت نے فیصلہ دیا، امریکی عدالت کے فیصلے کا اطلاق پاکستانی قوانین پر نہیں ہوتا، آئین کے تحت پاکستانی عدالتوں سے سزا یافتہ شخص انتخابات لڑنے کا اہل نہیں اور پاکستان کی کسی بھی عدالت نے عمران خان کے خلاف فیصلہ نہیں دیا۔

عمران خان کے وکیل نے کہا کہ آج کل مشہورشخصیات کا فیک ٹویٹراکاو¿نٹ بنا کر ٹوئٹ کئے جاتے ہیں، پاکستان میں ہرجگہ پیسہ بولتا ہے، پاکستان میں سائبرکرائم قانون موجود ہے، جوفوٹو کاپیاں لگائی گئی سائبرکرائم کے زمرے میں آتی ہیں، اب خواہشوں کو خبر بنانے کی ناکام کوشش کی جا رہی ہے، ہم نے تحریری جواب میں اعتراضات کو 7 بار مسترد کیا جب کہ سپریم کورٹ نے عمران خان کو صادق اورامین قراردیا ہے۔ ریٹرننگ آفیسر نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد عمران خان کے کاغذات نامزدگی مسترد کردیئے۔

دوسری جانب اسی حلقے سے سابق وزیر اعظم سابق شاہد خاقان عباسی اور پی ٹی آئی (گ) کی سربراہ عائشہ گلالئی کے کاغذات نامزدگی بھی مسترد ہوگئے ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here