پاکستان

نگران حکومت نے مون سون بارشوں سے پہلے کوئی انتظامات نہیں کیے:شہباز شریف

لاہور میں بارش ہونے کے 16 گھنٹے بعد یاد آیا کہ باہر نکل کر دیکھا جائے تاہم بارش سے پیدا ہونے والی صورتحال کی تمام تر ذمے داری نگران حکومت پر ہے

لاہور: سابق وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف کا کہنا ہے کہ نگران حکومت نے مون سون بارشوں سے پہلے کوئی انتظامات نہیں کیے لہٰذا بارش سے پیدا ہونے والی صورتحال کی تمام تر ذمہ دار نگران حکومت ہے۔لاہور میں طوفانی بارشوں کے بعد شہباز شریف اپنے حلقہ انتخاب این اے 132 کے دورے پر نکلے جہاں کارکنوں نے ان کی گاڑی پرپھول نچھاور کیے۔ شہباز شریف نے کہا کہ لاہور کی صورتحال کی ذمے دارنگران حکومت ہے جس نے انتظامات نہیں کیے۔خیال رہے کہ لاہور شہر اور گردونواح میں تیز ہواو¿ں کے ساتھ موسلا دھار بارش کے بعد نظام زندگی درہم برہم ہوگیا ہے اور مختلف واقعات میں 6 افراد جاں بحق اور متعدد زخمی ہوئے ہیں۔

محکمہ موسمیات کے مطابق لاہور میں صبح سے اب تک 252 ملی میٹر سے زائد بارش ریکارڈ کی جاچکی ہے جہاں واسا ہیڈ آفس میں 183، اپرمال میں 180، مغل پورہ میں 185 اور تاج پورہ میں 170 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی۔لاہور کی صورتحال پر سابق وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف کا جیو نیوز سے خصوصی گفتگو میں کہنا تھا کہ نگران حکومت نے مون سون بارشوں سے پہلے کوئی انتظامات نہیں کیے، نگران حکومت کو ایک ماہ ہوگیا ہے لیکن انہوں نے صوبے کی طرف توجہ نہیں دی۔انہوں نے کہا کہ برسات میں مجھ سمیت تمام وزرا اور افسران سڑکوں پر ہوتے تھے اور مون سون بارشوں سے ایک ماہ قبل ڈرینوں کی صفائی کرانی ہوتی ہے جو کہ نہیں کرائی گئی۔

شہباز شریف کا کہنا ہے کہ لاہور میں بارش ہونے کے 16 گھنٹے بعد یاد آیا کہ باہر نکل کر دیکھا جائے تاہم بارش سے پیدا ہونے والی صورتحال کی تمام تر ذمے داری نگران حکومت پر ہے۔دوسری جانب مسلم لیگ (ن) کی رہنما مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ عمران خان کو پتا ہونا چاہیے کہ شہبازشریف اب وزیراعلیٰ نہیں جب کہ شہباز شریف کے دور میں کبھی بارش کے بعد یہ حال نہیں ہوا لہذا موجودہ صورتحال کی ذمے دار نگران حکومت ہے۔یاد رہے کہ چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے لاہور میں بارش کے بعد کی صورتحال پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ پیرس میں بارش ہوتو سڑکیں پانی میں نہیں ڈوبتیں، شہباز شریف باہر نکلنے کے قابل نہیں، عوام میں بڑا غصہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ آدھے پاکستان کے پاس تعلیم کے مواقع میسر نہیں،جہاں عوام کے پاس تعلیم نا ہو وہ یہی کہے گی کہ کھاتا ہے تو لگاتا بھی تو ہے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close