بین الاقوامی

انڈونیشیا : مسافر کشتی الٹ گئی، 31 افراد ہلاک

غرق ہونے والی کشتی میں کل 139 مسافر اور 48 گاڑیاں موجود تھیں،خراب موسم کے باعث بحری جہاز ڈوبتی ہوئی مسافر کشتی کے قریب نہیں پہنچ سکی

جکارتہ: انڈونیشیا کے س±لاویسی جزیرے کے قریب مسافر کشتی الٹ جانے کے نتیجے میں بچوں سمیت 31 افراد ڈوب کر ہلاک اور 3 مسافر لاپتہ ہوگئے۔رپورٹ کے مطابق گزشتہ ہفتے سیاحتی ساحل سومارٹا میں بھی کشتی ڈوب گئی تھی۔عالمی میڈیا پر نشر ہونے والی تصویروں میں دیکھا جا سکتا ہے کہ کے ایم لیسٹری نامی مسافر کشتی پر سوار مسافر جان بچانے کے لیے کشتی کے کنارے پر موجود تھے جبکہ متعدد افراد سمندر میں تیرتے ہوئے ساحل پر پہنچنے کی کوشش کررہے تھے.۔

انڈونیشیا ڈیزاسٹرمینجمنٹ کے مطابق تاحال 31 لاشیں نکالی جا چکی ہیں جبکہ ریسکیو ٹیموں نے 74 مسافروں کو ڈوبنے سے بچالیا تاہم 3 افراد لاپتہ ہیں جن کے بارے میں کہا جارہا ہے کہ وہ کشتی میں پھنس کر اس کے ساتھ ڈوب گئے۔ڈیزاسٹر مینجمنٹ کے ایک افسر نوگروہو نے بتایا کہ ’غرق ہونے والی کشتی میں کل 139 مسافر اور 48 گاڑیاں موجود تھیں‘۔وزارت ٹرانسپورٹ کے مطابق خراب موسم کے باعث سمندر میں طغیانی تھی جس کے باعث بحری جہاز ڈوبتی ہوئی مسافر کشتی کے قریب نہیں پہنچ سکی جبکہ مچھیروں نے اپنی کشتیوں کے ذریعے متعدد لوگوں کو بچایا۔

اس حوالے سے بتایا گیا کہ 48 میڑ لمبی کشتی، س±ولاویسی کے قریبی ساحل سلایار جارہی تھی کہ تیز ہواو¿ں کے ساتھ بارش سے خطرناک لہریں پیدا ہو گئیں۔یاد رہے کہ انڈونیشیا میں سمندری حادثات کوئی نئی بات نہیں، 17 ہزار جزائر پر مشتمل انڈونیشیا میں لوگ بیشتر کشتوں پر سفر کرتے ہیں جہاں اکثر حفاظتی انتظامات سوالات اٹھائے جاتے ہیں۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close