پاکستان

نگران وزیراعظم جسٹس (ر) ناصر الملک کی زیر صدارت قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس

نگران وزیر خزانہ شمشاد اختر نے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس اور انٹرنیشنل کوآپریشن ریویو گروپ کے پیرس میں منعقدہ اجلاسوں کے دوران ہونے والے غور و خوض بارے تفصیلی آگاہ کیا

اسلام آباد:قومی سلامتی کمیٹی نے منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کیلئے سرمائے کی فراہمی کی روک تھام کے حوالہ سے ذمہ داریوں کی ادائیگی کے عزم کا اعادہ کیا ہے۔ قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس جمعہ کو نگران وزیراعظم جسٹس (ر) ناصر الملک کی زیر صدارت وزیراعظم ہاوس میں منعقد ہوا۔

اجلاس میں نگران وزیر دفاع نعیم خالد لودھی، وزیر خارجہ عبدآ حسین ہارون، وزیر خزانہ ڈاکٹر شمشاد اختر، وزیر داخلہ محمد اعظم خان، وزیر اطلاعات و قانون سیّد علی ظفر، چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی جنرل زبیر محمود حیات، چیف آف آرمی سٹاف جنرل جاوید قمر باجوہ، پاک بحریہ کے سربراہ ایڈمرل ظفر محمود عباسی، پاک فضائیہ کے سربراہ ایئر چیف مارشل مجاہد انور، ڈی جی آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل نوید مختار اور سینئر سول و عسکری حکام نے شرکت کی۔

وزیر خزانہ شمشاد اختر نے اجلاس کے شرکاءکو فنانشل ایکشن ٹاسک فورس اور انٹرنیشنل کوآپریشن ریویو گروپ کے پیرس میں منعقدہ اجلاسوں کے دوران ہونے والے غور و خوض کے بارے میں تفصیلی آگاہ کیا۔ ایکشن پلان کی تفصیلات اور پیشرفت کے طریقوں پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ کمیٹی نے فورم میں وزیر خزانہ اور ان کی ٹیم کی کاوشوں کو سراہا۔ اجلاس کے دوران ملک میں مجموعی اقتصادی صورتحال کا بھی جائزہ لیا گیا۔ وزیر خزانہ نے معیشت کی صورتحال کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close