پاکستان

یہ ایسا فیصلہ ہے جو تاریخ میں سیاہ حروف میں یاد رکھا جائے گا ‘ شہباز شریف

ایسی کوئی ٹھوس قانونی دستاویز مہیا نہیں کی گئی جس سے نواز شریف کا نام پانامہ یا ایون فیلڈ کی ملکیت ثابت ہوتی ہو ،فیصلہ نا انصافی کی بنیاد پر مبنی ہے ،مسلم لیگ (ن) کے صدر کی ہنگامی پریس کانفرنس

لاہور: پاکستان مسلم لیگ (ن) نے ایون فیلڈ ریفرنس میں احتساب عدالت کے فیصلے کو مسترد کرتے ہوئے انصاف کے حصول کےلئے آئینی و قانونی چارہ جوئی کرنے اور انتخابی مہم کو پر امن احتجاج کا ذریعہ بنانے کا اعلان کر دیا ۔ پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر و سابق وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے احتساب عدالت کے فیصلے کے بعد مرکزی سیکرٹریٹ ماڈل ٹاﺅن میں ہنگامی پریس کی ۔ اس موقع پر مشاہد حسین سید ،خواجہ سعد رفیق ، حمزہ شہباز پرویز ملک ،زاہد حامد ، خواجہ احمد حسان سمیت دیگر بھی موجود تھے۔

شہباز شریف نے کہا کہ یہ ایسا فیصلہ ہے جو کہ تاریخ میںسیاہ حروف میں یاد رکھا جائے گا ۔ سپریم کورٹ کی سماعت ، جے آئی ٹی کی تحقیقات کے بعد دس جلدوںں پر مشتمل تفتیشی رپورٹ میں ایسی کوئی ٹھوس قانونی دستاویز مہیا نہیں کی گئی کہ جس سے نواز شریف کا نام پانامہ یا ایون فیلڈ کی ملکیت ثابت ہوتی ہو ۔ انہوں نے کہا کہ احتساب عدالت نے نا انصافی کی بنیاد پر فیصلہ دیا ہے جبکہ دوسری طرف ایسا فیصلہ بھی ہے کہ ایک سیاسی شخصیت کے حوالے سے جس کے بارے میں خود احتساب عدالت نے فیصلہ دیا کہ چونکہ اصل دستاویزات موجودو نہیں اور فوٹو کاپیز کی بنیاد پر ہم اس کیس کو خارج کرتے ہیں اور اس بڑی سیاسی شخصیت کو ریلیف دیا گیا۔

لاہور ہائیکورٹ نے 2010ءمیں نیب کو خط لکھا اور ہدایات دیں کہ چنیوٹ میں لوہے کے ذخائر میںساڑھے چارسو ارب کا فراڈ کرنے والوں کے خلاف تادیبی کاررائی کی جائے او رانہیں قرار واقعی سزا دی جائے لیکن اس واقعہ کو آٹھ سال گزر گئے ہیں جس خائن نے قوم کے ساڑھے چار سو ارب لوٹے اسے کلین چٹ دیدی گئی ۔ سپریم کورٹ کے جج رحمت حسین جعفری کی کمیشن کی رپورٹ میں کہا گیا کہ نندی پور کیس میں بابر اعوان براہ راست ذمہ دار ہیں لیکن نیب نے آج تک ان کے خلاف کارروائی نہیں کی ۔ اس کے علاوہ بہت سے مقدمات سالہا سال سے التواءمیں پڑے ہوئے ہیں جن کے ذریعے اس غریب ملک کی ایک نہیں کئی سو اربوں کی جمع پونجی لوٹی گئی اور ان کے بلیک اینڈ وائٹ ثبوت بھی موجود ہیں ۔

نواز شریف او ر ان کی صاحبزادی نے نیب عدالت میں 109پیشیاں بھگتیں حتیٰ کہ چھٹی کے روز بھی کیس چلانے کی بات ہوئی ۔انہوںنے کہا کہ بہت سے کارنامے او رمنصوبے ہیں جن کا کریڈٹ نواز شریف کو جاتا ہے ، نواز شریف نے اس ملک کو ایٹمی قوت بنایا اور قوم کی دعاﺅں سے خارجی دباﺅ ، دھمکیوں اور لالچ کو بھی پایہ حقارت سے ٹھکرا دیا اور ملک کے وسیع تر مفاد میں فیصلہ کیا ۔ملک میں سی پیک کا موجد کون ہے ؟، چین نے نواز شریف کی وجہ سے سی پیک کا تحفہ دیا ، گوادر کے حوالے سے خوشحالی اور ترقی کا معاشی پروگرام کا موجد کون ہے ؟،ملک میں موٹرویز کا جال نواز شریف نے بچھایا ، دیا میر بھاشا ڈیم کے منصوبے کو سرد خانے سے نکال کر کس نے عملی طور پر آگے بڑھایا،وہ کون شخص ہے جس نے اقوام متحدہ میں کشمیر کے معاملے میں طاقتور مقدمہ پیش کیا اور وہ نواز شریف ہی ہے ۔ اس قوم کے سپوت او رفرزند کو جو سزا سنائی گئی ہے وہ قطعاً اس کے حقدار نہیں تھے ۔ نواز شریف نے اس ملک کی بے پناہ خدمت کی ہے ۔

جب یورپ او رامریکہ نے ایٹمی دھماکوں کی وجہ سے پاکستان پر پابندیاں لگائیں تو ملک کےلئے تین سال مفت تیل کا تحفہ نواز شریف لے کر آیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف نے ہمیشہ دباﺅ کا مقابلہ حوصلے ، خندہ پیشانی اور بہادری سے کیا ہے ۔ انصاف کے حصول میں سخت تحفظات ہونے ، اہلیہ کی شدید علالت کے باوجود 19اکتوبر 2017سے اپنی صاحبزادی کے ہمراہ عدالت میںپیش ہوتے رہے ، کیا پاکستان کی 70سالہ تاریخ میں اس کی کوئی مثال موجود ہے ۔

اور وہ خائن جنہوں نے ملک کی دولت کو لوٹا ، معیشت کو تباہ کیا ، اس کی جڑوں کو کھوکھلا کیا ، ملک کو کنگال کیا ان کے بارے میں اب تک کیا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ انہوںنے کہا کہ ایک احتساب عدالت نے فیصلہ دیا ہے مگر 25جولائی کو ایک عوامی عدالت بھی لگنے والی ہے اور اللہ کے فضل و کرم سے یہ ثابت کرے گا کہ عوامی عدالت کا فیصلہ ٹھیک ہے اور عوامی عدالت کا فیصلہ احتساب عدالت کے بارے میں ووٹوں کے ذریعے بڑے زور سے گونجے گا ۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close