اہم خبریںپاکستان

الیکشن 2018:پی ٹی آئی کو برتری،ن لیگ نے نتائج مسترد کردئیے

کے پی میں تحریک انصاف کی 63نشستوں کیساتھ دوبارہ حکومت بنانیکی پوزیشن میں ‘ بلوچستان کی صوبائی اسمبلی میں کوئی بھی جماعت واضح اکثریت حاصل نہیں کرسکی ہے ‘ غیر حتمی غیر سرکاری نتائج

اسلام آباد،لاہور :عام انتخابات 2018 میں غیر سرکاری و غیر حتمی نتائج کے مطابق پاکستان تحریک انصاف نے میدان مارلیا ہے پی ٹی آئی کو 110نشستوں کے ساتھ برتری حاصل ہے ، مسلم لیگ (ن) 71 نشستوں کے ساتھ دوسرے اور پاکستان پیپلز پارٹی 40نشستوں کے ساتھ تیسرے نمبر پر ہے، آزاد امیدواروں کو 23 نشستیں حاصل ہوئی ہیں ، متحدہ مجلس عمل کو 9 سیٹوں پر برتری حاصل ہے۔ پیپلز پارٹی، ایم ایم اے، ایم کیو ایم سمیت تقریبا تمام سیاسی جماعتوں نے الیکشن کی شفافیت پر تحفظات و خدشات کا اظہار کیا ہے ،مسلم لیگ ن کے صدر شہبازشریف نے نے انتخابات کے نتائج کو مستردکردیا ہے ۔ ۔تفصیلات کے مطابق ملک بھر میں بدھ کو قومی اسمبلی کی 270 جبکہ چاروں صوبوں کی 570 نشستوں پر پولنگ کا عمل صبح 8 بجے شروع ہوا جو شام 6 بجے تک بلا تعطل جاری رہا۔

انتخابات کے غیر حتمی ،غیر سرکاری نتائج کے مطابق قومی اسمبلی کی نشستوں پر پی ٹی آئی کو 110نشستوں کے ساتھ برتری حاصل ہے ، مسلم لیگ (ن) 71نشستوں کے ساتھ دوسرے اور پاکستان پیپلز پارٹی40نشستوں کے ساتھ تیسرے نمبر پر ہے، آزاد امیدواروں کو 20 نشستیں حاصل ہوئی ہیں ، مجلس عمل کو 9سیٹوں پر برتری حاصل ہے، اسکے علاوہ ایم کیو ایم پاکستان 5،جی ڈی اے 6،مسلم لیگ ق کی چار نشستیں ہیں ۔ پنجاب اسمبلی میں غیر سرکاری و غیر حتمی نتائج کے مطابق مسلم لیگ( ن) کو 137،پی ٹی آئی 124 اور آزاامیدوار 29 نشستوں کے ساتھ برتری حاصل کئے ہوئے ہیں ۔

سندھ اسمبلی میں پاکستان پیپلز پارٹی 73،تحریک انصاف 21،ایم کیو ایم پاکستان 16 نشستوں کے ساتھ برتری حاصل کئے ہوئے ہیں۔خیبرپختونخوا اسمبلی میں تحریک انصاف 63نشستوں پر برتری کے ساتھ اپنی حکومت دوبارہ بنانے کی پوزیشن میں ہے ،جبکہ اے این پی 10 ،ایم ایم اے کے سات امیدوار برتری حاصل کئے ہوئے ہیں ۔اسی طرح بلوچستان کی صوبائی اسمبلی میں کوئی بھی جماعت واضح اکثریت حاصل نہیں کرسکی ہے ،دوبارہ مخلوط حکومت بننے کے امکانات ہیں ،بلوچستان عوامی پارٹی 13،بی این پی 9،پی کے میپ 7نشستوں کے ساتھ برتری حاصل کئے ہوئے ہیں ۔

پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان ، شہباز شریف، پی پی پی چیئرمین بلاول زرداری بھٹو، آصف علی زرداری،مولانا فضل الرحمان، شاہ محمود قریشی ، ،میاں منظور وٹو، امیر حیدر ہوتی، پرویز خٹک، صاحبزادہ طارق اللہ ،میجر (ر)طاہر صادق ، احسن اقبال، خرم دستگیر ، ،احسن اقبال، اسد عمر ، ڈاکٹر یاسمین راشد کامیاب جبکہ سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی این اے53 اسلام آباد کے حلقے میں عمران خان سے ہار گئے اور دوسرے حلقے میں پی ٹی آئی کے صداقت عباسی کے خلاف بھی انکی وزیشن کمزور ہے ۔،مرتضی جاوید عباسی ،سابق وزیرامور کشمیر چوہدری برجیس طاہر، طلال چوہدری، خواجہ آصف سمیت ن لیگ کے متعدد امیدواران کے علاوہ ایم کیو ایم پاکستان کے فاروق ستارپارلیمنٹ دوڑ سے باہر ہو گئے۔پنجاب کی صوبائی اسمبلی میں پی ٹی آئی کے امیدواروں کو برتری حاصل جبکہ ن لیگ دوسرے نمبر پر ہے خیبر پختونخواہ میں بھی پی ٹی آئی آگے ہے اور متحدہ مجلس عمل ، اے این پی سمیت دوسری جماعتیں پیچھے ہیں۔اے این پی کے غلام احمد بلور نے اپنی شکست تسلیم کرلی۔ پیپلز پارٹی کو سندھ میں اکثریت مل گئی ۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close