اہم خبریںپاکستان

امیر مقام آمدن سے زائد اثاثے بنانے کے الزام میں نیب خیبر پختونخوا میں پیش

امیر مقام پر اسلام آباد، لاہور اور پشاور میں جائیدادیں، سوات، شانگلہ اور پشاور میں زرعی اراضی خریدنے کا الزام ہے:نیب

پشاور:مسلم لیگ (ن) کے صوبائی صدر امیر مقام آمدن سے زائد اثاثے بنانے کے الزام میں جمعرات کو نیب خیبر پختونخوا میں پیش ہوئے۔نیب کے مطابق امیر مقام پر اسلام آباد، لاہور اور پشاور میں جائیدادیں جب کہ سوات، شانگلہ اور پشاور میں زرعی اراضی خریدنے کا الزام ہے۔نیب حکام نے امیر مقام کو طلب کیا تھا جس پر وہ پشاور میں نیب کے دفتر پہنچے جہاں نیب حکام نے ان سے سوال و جواب کیے۔نیب میں پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مسلم (ن) کے پی کے صدر امیر مقام نے کہا کہ نیب نے ایک فارم دیا ہے جس میں اثاثوں کی تفصیل بتانی ہے۔
انہوں نے خیبرپختونخوا میں تحریک انصاف کی سابقہ حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ نیاپاکستان بنانے والے مستریوں نے کے پی کے میں دیواریں ٹیڑھی بنائی ہیںکے پی کے میں پہاڑ گنجے ہیں لہٰذا نیب بلین ٹری منصوبے کا نوٹس لے۔امیر مقام کے مطابق انتخابی نتائج سے پتہ چل رہا ہے ہے کہ الیکشن میں کیا ہوا، ہمارا فرق صرف 40 ووٹوں کا فرق تھا اور دوبارہ گنتی میں چارتھیلے غائب ہوگئے۔لیگی رہنما نے کہا کہ خیبرپختونخوا کے سرکاری ہیلی کاپٹر کو رکشے کی طرح استعمال کیا گیا اس کی بھی مکمل تحقیقات ہونی چاہیے۔یاد رہے کہ نیب نے امیر مقام کو پہلی مرتبہ 12 اور پھر 19 جولائی کو طلب کیا تاہم انہوں نے انتخابی مصروفیات کے باعث نیب سے پیشی کے لیے معذرت کرتے ہوئے وقت مانگا۔

 

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close