اہم خبریںپاکستان

عبدالعلیم خان آف شور کمپنی کیس میں نیب میں پیش ، 3رکنی تفتیشی ٹیم کی ایک گھنٹے تک پوچھ گچھ

کیس سیاسی بنیادوں پر بنایا گیا ، اب تک130 دستاوایزت نیب میں جمع کرواچکا ہوں، دوبارہ بھی جب بلایا گیا تو حاضرہونگا :میڈیا سے گفتگو

لاہور: تحریک انصاف کے رہنما عبدالعلیم خان آف شور کمپنی کیس میں قومی احتساب بیورو کی تحقیقاتی ٹیم کے روبرو پیش ہو گئے جن سے ایک گھنٹے تک پوچھ گچھ کی گئی جبکہ مسلم لیگ (ن) کے نومنتخب رکن قومی اسمبلی اظہر قیوم ناہرہ اور انکے بھائی مدثر ناہرہ بھی آمدن سے زائد اثاثے بنانے کے کیس میں پیش ہوئے جنہیں سوالنامہ دیا گیا ۔ تفصیلات کے مطابق تحریک انصاف کے رہنما عبدالعلیم خان 6 اگست کو بھی نیب ٹیم کے روبرو پیش ہو کر آف شور کمپنی سے متعلق ریکارڈ جمع کرا چکے ہیں۔
نیب ذرائع کے مطابق عبدالعلیم خان کو جمع کرائے گئے جوابات اور ریکارڈ سے متعلق سوالات کرنے کیلئے دوبارہ طلب کیا گیا تھا ۔ نیب کی تین رکنی تفتیشی ٹیم نے علیم خان سے تقریباً ایک گھنٹے تک پوچھ گچھ کی۔پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے عبدالعلیم خان نے کہا کہ پہلے دن جب نیب میں آیا تھا تو کہا تھا جب بلائیں گے تو آﺅں گا ۔اب تک 130 دستاویزات جمع کروا چکا ہوں جو بھی سوال پوچھے گئے ان کے جواب دیئے ، اگر کوئی برا کام نہیں کیا تو کہیں بھی پیش ہوسکتا ہوں۔
اگرہماراچیئرمین پیش ہوسکتا ہے توہمیں کیا تکلیف ہے۔میرے کے خلاف کیسز سیاسی بنیادوں پر بنائے گئے ہیں۔ نیب کے ساتھ ہر قسم کے تعاون کیلئے تیار ہوں ،آئندہ بھی جب نیب بلائے گی تو پیش ہوں گا۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ مشکل وقت میں عمران خان کے ساتھ کھڑا رہا ،ہمیشہ ڈٹ کر مخالفین کا مقابلہ کیا ،آج عمران خان وزیر اعظم ہاﺅس جارہے ہیں اور وہ 18تاریخ کو حلف اٹھائیں گئے۔ میری کوئی خواہش نہیں ہے عہدہ ملے نہ ملے ہم جہدوجہد جاری رکھیں گے،اگرمفادپرست ہوتے توماضی کے حکمرانوں کے ساتھ ہوتے۔دوسری جانب مسلم لیگ (ن) کے نومنتخب رکن قومی اسمبلی اظہر قیوم ناہرہ اور انکے بھائی مدثر ناہرہ کو بھی آمدن سے زائد اثاثے بنانے کے کیس طلب کیا گیا تھا جس پر دونوں نیب کی تفتیشی ٹیم کے روبرو پیش ہو گئے ۔دونوں سے تقریباً چار گھنٹے تک پوچھ گچھ کی گئی جس کے بعد انہیں سوالنامہ دیا گیا ۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close