پاکستان

ہمارا طرز حکومت دوسری حکومتوں سے مختلف ہوگا :وزیراعلی پنجاب

بیوروکریسی میں اچھے لوگ بھی ہیں انکی حو صلہ افزائی کریں گے اور کام نہ کرنے والوں کیخلاف ایکشن لیا جائے گا:سردار عثمان بزدار کا انٹرویو

لاہور: وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے واضح کیا ہے کہ ہمارا طرز حکومت دوسری حکومتوں سے مختلف ہوگا ،غیر قانونی احکامات میں بھی دوں تو عمل نہیں کیا جائے ، گزشتہ دور میں وزیر اعلیٰ ہاﺅس کے اخراجات اور دیگر معاملات کی انکوائری کیلئے سیکرٹری سے تفصیلات طلب کر لی ہیں،سانحہ ماڈ ل ٹاﺅن کو بھی دیکھیں گے۔انہوں نے ایک نجی ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ ہمارا پلان ہے کہ عمران خان کے ویژن کو عملی جامہ پہننا ہے ،پنجاب میں مسائل زیادہ ہیں جس کے حل کیلئے ہنگامی بنیادوں پر دورے کریں گے۔
کرپشن اس ملک کا سب سے برا ناسور ہے اس کا کاتمہ کریں گے اور اب کرپشن نہیں ہونے دیں گے،جو افسر کرپشن کرے گا وہ خود کو فارغ سمجھے،کام کرنے والے اچھے افسروں کی حوصلہ افزائی کریں گے اور جو کام نہیں کرنا چاہتا وہ اپنا بندوبست کر لے۔عثمان بزدار نے کہا کہ وزیر اعلیٰ ہاﺅس کے 260ملازم نگران حکومت نے فارغ کیے، ضرورت پڑی تو اور ملازمین کو بھی فارغ کیا جائے گا،صوبے بھر میں سادگی لائیں گے اور اپنے اخراجات کم کریں گے، ،اینٹی کرپشن کو ٹھیک کرنا ہے اور جلد اس حوالے سے کام شروع ہو جائے گا،اگر یہ ادارہ ٹھیک ہوگیا تو سارے معاملات تھیک ہوجائیں گے،ان افسروں کی کارکردگی کو جانچنے احتساب کے پیمانے بنائیں گے۔
عوام کی سہولت کیلئے کم سے کم پروٹوکول لوں گا ، میرا کوئی روٹ پلان نہیں ہوگا اور میری گاڑی ہر ٹریفک سگنل پر رکے گی ۔ وزیر اعلی پنجاب نے کہا کہ زرعی معاملات کو دیکھنے کیلئے ماہرین کی خدمات حاصل کریں گے ،صوبے میں امن و امان کی صورتحال کو یقینی بنائیں گے ،پنجاب میں تھانہ کلچر کو تبدیل کرکے خیبر پختوانخواہ کا ماڈل رائج کریں گے،کوشش ہے کہ پنجاب میں ایک اچھی ٹیم متعارف کروائیں ۔ انہوں نے کہا کہ اسمبلی کے ہر اجلاس اپنی میں شرکت کو یقینی بنانے کی کوشش کروں گا اور وزیر اعلیٰ ہاﺅس میں بھی روزانہ حاضری دوں گا ۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ہمارا طرز حکومت دوسری حکومتوں سے مختلف ہوگا ،غیر قانونی احکامات میں بھی دوں تو عمل نہیں کیا جائے ۔
گزشتہ دور میں وزیر اعلیٰ ہاﺅس کے اخراجات اور دیگر معاملات کی انکوائری کیلئے سیکرٹری سے تفصیلات طلب کر لی ہیں جبکہ سانحہ ماڈ ل ٹاﺅن کو بھی دیکھیں گے۔ ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ میں عمران خان کا سپاہی اور پاکستان کا ایجنٹ ہوں ،میرے اوپر لگائے جانے والے تمام تر الزامات بے بنیاد ہیں،میں نے صرف دو قبیلوں میں صلح کروائی اور یہ تو اسلام میں بھی ہے،کسی سازش کی پرواہ نہیں ہم نے صرف میرٹ پر فیصلہ کرنا ہے،ہمارا ایجنڈہ صرف کام اور عوام کی خدمت ہے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close