کاروبار

کاشتکار کسی بھی ملک کی ترقی میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے،اسپیکر قومی اسمبلی

اسلام آباد:سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا کہ پاکستان ایک زرعی ملک ہے اور ہماری ترقی میں اسے ریڑھ کی ہدی کی حیثیت حاصل ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے صوابی سے تعلق رکھنے والے تمباکوسے وابستہ کاشتکاروں کے ایک وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ملاقات میں وفد نے سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کو صوابی میں تمباکو کے کاشتکاروں کے مسائل سے آگاہ کیا۔وفدنے کہا کہ تمباکو کی فصل سے علاقے کے عوام کا روزگار وابستہ ہے ۔کاشت کاروں کو فصل کو فروخت کرنے میں بھی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔کاشت کاروں کا مزید کہنا تھا کہ ہماری فصل جلد فروخت نہ ہونے کی بدولت ضائع ہو جاتی ہے ۔
اس موقع پر سپیکر نے ٹوبیکوبورڈ کے چیئر مین اور سیکرٹری کامرس کو تمباکوکے کاشت کاروں کے مسائل کو ترجیح بنیادوں پر حل کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ کاشت کار کسی بھی ملک کے اہم سرمایہ ہوتے ہیں انہیںدرپیش مسائل کے حل کے لیے متعلقہ محکموں کو خصوصی اقدامات کرنے چاہیے۔انہوں نے کہا کہ کاشت کاروں سمیت تما م محنت کش طبقے کے مسائل کو حل کرنا موجوہ حکومت کی ترجیحات میں شامل ہے ۔انہو ں نے متعلقہ اداروں کو ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ کاشت کاروں کو فصل کی فروخت کے لیے حائل رکاوٹوں کی وجہ سے مشکلات کا سامنا ہے اس کا فوری تدارک کرنا ضروری ہے ۔
اس موقع پر سپیکر قومی اسمبلی نے کاشت کاروں کے مسائل کو حل کرنے کے لیے تین رکنی کمیٹی تشکیل دے دی ہے جو میجر ریٹائرڈ فدا ،انورحقداراور عطااللہ پر مشتمل ہو گی ۔سپیکر نے کہا کہ کمیٹی کاشت کاروں کے ساتھ گفت وشنید کے بعد تجاویز مرتب کرے گی۔انہوں نے کہا کہ کاشت کاروں کے مسائل کو حل کرنے کے لیے کمیٹی کی مرتب کردہ تجاویز کو فوری طوری ٹوبیکو بورڈ کو بجھوائی جائیں گی اور وزارت تجارت ان کے مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کریں گے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close