بین الاقوامی

غزہ کی سرحد پر اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے فلسطینی نوجوان شہید

واقعے کے وقت غزہ کی سرحد پر فلسطینیوں نے ٹائر جلا رکھے تھے اور اسرائیلی فوج پر سنگ باری کررہے تھے،وزارت صحت

مقبوضہ غزہ:فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی کی سرحد پر قابض اسرائیلی فوج نے فائرنگ کرکے ایک فلسطینی نوجوان کو شہد کردیا۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق فلسطینی وزارت صحت نے کہاکہ یہ واقعہ مشرقی غزہ میں پیش آیا جہاں اسرائیلی فوج نے ایک 21 سالہ نوجوان کے سرمیں گولی ماری جس کے نتیجے میں وہ موقع پر شہید ہوگیا۔ شہید فلسطینی نوجوان کی شناخت عماد اشتیوی کے نام سے کی گئی ہے۔یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب غزہ کی سرحد پر فلسطینیوں نے ٹائر جلا رکھے تھے اور وہ اسرائیلی فوج پر سنگ باری کررہے تھے۔
خیال رہے کہ 30 مارچ سے فلسطینی شہری حق واپسی کے لیے غزہ کی سرحد پر مظاہرے کرتے ہیں۔ ان فلسطینیوں کو 1948ءکے دوران ان کے گھروں سے نکال دیا تھا اور وہ پون صدی سے غزہ میں مہاجر کے طورپر زندگی گذار رہے ہیں۔تیس مارچ کے بعد اسرائیلی فوج اور فلسطینی مظاہرین میں سرحد پر پرتشدد جھڑپیں ہوتی رہی ہیں۔ اسرائیلی فوج کی فائرنگ اور تشدد کے نتیجے میں 186 فلسطینی شہید اور بیس ہزار سے زاید زخمی ہوچکے ہیں۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close