اہم خبریں

العزیزیہ ریفرنس کی سماعت ، نوازشریف کی عدالت میں پیشی

اسلام آباد :سابق وزیر اعظم نوازشریف کے خلاف العزیز یہ اسٹیل مل ریفرنس میں نیب کے گواہ محبوب عالم نے کہا ہے کہ ہل میٹل سے ایک خطیر رقم ملزمان اور ان سے متعلقہ افراد کو منتقل ہوئی،نجی بینک کے افسر علی رضا نے متعلقہ ریکارڈ ہمارے حوالے سے کیا ۔جمعرات کو احتساب عدا لت کے جج ارشد ملک نے کیس کی سما عت کی ۔ سابق وزیر اعظم محمد نوازشریف تین روز کے استثنیٰ کے بعد عدالت میں پیش ہوئے ۔سماعت کے دور ان نیب کے تفتیشی افسر محبوب عالم نے اپنے بیان میں عدالت کو بتایا کہ ہل میٹل سے ایک خطیر رقم ملزمان کو اور ان سے متعلقہ افراد کو منتقل ہوئی،متعلقہ بینکوں سے تفتیش کے دوران ریکارڈ بھی طلب کیا تھا ،نجی بینک کے افسر علی رضا بھی تفتیش میں شامل ہوئے تھے ،علی رضا نے متعلقہ ریکارڈ ہمارے حوالے کیا،حبیب بینک مسلم ٹاون برانچ لاہور کے عرفان محمود بھی شامل تفتیش ہوئے ،عرفان محمود نے بھیجی گئی رقم کا ریکارڈ پیش کیا۔
حبیب بینک واپڈا ٹاون برانچ کے اظہر اکرام نے بھی ریکارڈ فراہم کیا ،اظہر اکرام نے انجم اقبال سے متعلق ریکارڈ پیش کیانجی بینک کے آپریشن مینیجر سنیل اعجاز کھوکھر نے عبدالرزاق کو بھیجی گئی رقوم کا ریکارڈ پیش کیا،سٹینڈرڈ چارٹرڈ بینک کے حسن کرمانی نے خواجہ ہارون پاشا کو بھیجی گئی رقوم کا ریکارڈ پیش کیا،سٹینڈرڈ چارٹرڈ کی نورین شہزادی نے حسین نواز کی بینک ٹرانزیکشن کا ریکارڈ پیش کیا۔انہوںنے کہاکہ ہل میٹل سے ایک خطیر رقم ملزمان کو اور ان سے متعلقہ افراد کو منتقل ہوئی،سابق وزیر اعظم نواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز کے اکاونٹ میں بھی رقم منتقل ہوئی ،متعلقہ بینکوں سے تفتیش کے دوران ریکارڈ بھی طلب کیا تھا۔
نجی بینک کے افسر علی رضا بھی تفتیش میں شامل ہوئے تھے،علی رضا نے متعلقہ ریکارڈ ہمارے حوالے کیاحبیب بینک مسلم ٹاون برانچ لاہور کے عرفان محمود بھی شامل تفتیش ہوئے ۔عرفان محمود نے محمد حنیف خان کو بھیجی گئی رقم کا ریکارڈ پیش کیاحبیب بینک واپڈا ٹاون برانچ کے اظہر اکرام نے بھی ریکارڈ فراہم کیا۔اظہر اکرام نے انجم اقبال سے متعلق ریکارڈ پیش کیا۔نجی بینک کے آپریشن مینیجر سنیل اعجاز کھوکھر نے عبدالرزاق کو بھیجی گئی رقوم کا ریکارڈ پیش کیانواز شریف کے ٹی وی انٹرویو اور قومی اسمبلی کے خطاب کے حصول کے لئے وزارت اطلاعات کو خط لکھا وزارت اطلاعات کو 29 جنوری 2018 کو خط لکھا۔خواجہ حارث نے اعتراض کرتے ہوئے کہاکہ بیان کا یہ حصہ گواہ کے متعلقہ نہیں۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close